چیف جسٹس ثاقب نثارنے تعلیمی معیارکی بہتری کیلئے کمیٹی قائم کردی مضبوط تعلیمی نظام

اسلام آباد : چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے تعلیمی معیار کی بہتری کیلئے کمیٹی قائم کردی، ان کا کہنا ہے کہ مضبوط تعلیمی نظام ہی مضبوط معاشی نظام کی ضمانت ہے، اس شعبے پر توجہ دیئے بغیر سب لاحاصل ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے تعلیمی اصلاحات کے حوالے سے منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ترجمان سپریم کورٹ کے مطابق چیف جسٹس کی زیر صدارت تعلیمی اصلاحات سے متعلق اجلاس ہوا۔

اجلاس میں وفاقی محتسب طاہر شہباز ،  سابق چیئرمین ایچ ای سی ڈاکٹر مختار احمد، سیکریٹری کیڈ، سیکرٹری تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت سمیت صوبائی سیکریٹریز بھی موجود تھے۔

اس موقع پر چیف جسٹس ثاقب نثار  نے شرکاء کو  ملک میں تعلیم سے متعلق وژن سے آگاہ کیا اور شرکاء نے  چاروں صوبوں میں  نظام تعلیم کی موجودہ صورتحال پر بریفنگ دی۔

ترجمان سپریم کورٹ کے مطابق اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ تعلیم کے شعبے پر توجہ دیئے بغیر سب لاحاصل ہے کیونکہ مضبوط تعلیمی نظام ہی مضبوط معاشی نظام کی ضمانت ہے، ملک کے گوشے کوشے میں معیاری تعلیم عوام کا بنیادی حق ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تعلیمی پالیسی بنانا عدالت کا کام نہیں لیکن بنیادی حقوق پر عمل درآمد کرانا عدالت پر لازم ہے، ترجمان کے مطابق چیف جسٹس نے تعلیمی معیار میں بہتری لانے کیلئے کمیٹی قائم کردی،۔

وفاقی محتسب طاہر شہباز کمیٹی کے سربراہ ہوں گے، کمیٹی کو تعلیمی نظام میں بہتری کیلئے ٹی او آرز تیارکرنے کی ہدایت کی گئی ہے، اس کے علاوہ چیف جسٹس نے کام مکمل ہونے تک کمیٹی ارکان کے تبادلوں پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Source by [author_name]

اپنا تبصرہ بھیجیں