سکھ یاتریوں کو مشتعل کرنے کا بھارتی الزام بے بنیاد ہے، دفتر خارجہ

اسلام آباد: دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل نے سکھ یاتریوں کو مشتعل کرنےکے بھارتی الزام کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ جھوٹے بیان سے بھارت یاتریوں کے مسئلے کو بھڑکا رہا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ پاکستان دنیا بھر سے آنے والے ہندوؤں، سکھ یاتروں کو ہمیشہ خوش آمد ید کہتے ہوئے  اُن کو بہترین سہولیات فراہم کرتا ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ سکھ یاتریوں نےمقدس مقامات کےدوروں میں پاکستان کی جانب سے فراہم کی گئی سہولتوں کوسراہا جبکہ بھارت میں یہی کمیونٹی متنازع فلم کی نمائش کے خلاف احتجاج کررہی ہے۔

ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ بھارت میں ریلیز ہونے والی متنازع فلم سےلوگوں کے جذبات مجروح ہوئے اور سکھ کمیونٹی کے احتجاجی مظاہرے یاتریوں کی پاکستان آمدسےپہلےسے ہی بھارت سمیت دنیا بھر میں جاری ہیں۔  ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ صورتحال میں سکھ یاتریوں نے حکام سےملنےسےانکارکیا جس پر بھارتی ہائی کمشنر نے 14 اپریل کا دورہ منسوخ کیا۔

دفتر خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ حقائق  چھپانےکی بھارتی کوشش غیراخلاقی اور قابل مذمت ہے، بھارت نے ہمیشہ حقائق کو توڑ مروڑ کر پاکستان کے خلاف پیش کرتے ہوئے بین الاقوامی اقدار کی خلاف ورزی کی۔

اُن کا مزید کہنا تھا کہ بھارتی اعلیٰ حکام ماضی میں بھی پاکستانی خودمختاری کیخلاف بیانات دیتےرہےہیں، بھارت کو تمام مذاہب بالخصوص اقلیتوں کا احترام کرناچاہیے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Source by [author_name]

اپنا تبصرہ بھیجیں