سسلین مافیا کے حربے عدلیہ کو دباؤ میں لانے کی کوشش ہیں، عمران خان imran khan

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ کی مذمت کرتے ہیں، سسلین مافیا کے حربے عدلیہ کو دباؤ میں لانے کی کوشش ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کیا، عمران خان نے کہا کہ دنیا کی کسی بھی جمہوریت میں ججوں کو دھمکانے کے لیے سسلین مافیا جیسے حربوں کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔

تحریک انصاف کے چیئرمین نے کہا کہ ایسے حربے کسی بھی جمہوری نظام میں ناقابل قبول ہیں، پی ٹی آئی عدالتوں اور قانون کی حکمرانی کے ساتھ کھڑی ہے، 29 اپریل کو مینار پاکستان پر ہمارے جلسے کی وجہ بھی یہی ہے۔

پی ٹی آئی رہنما علیم خان کا کہنا ہے کہ عدلیہ پر حملہ کرنے والے کرداروں کو بے نقاب کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں، واقعے کی پیچھے کون عناصر ہیں، عوام کے سامنے لایا جائے، پی ٹی آئی عدلیہ کو بری نظر سے دیکھنے والوں کے خلاف سیسہ پلائی دیوار ثابت ہوگی۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ کے جج جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ کا واقعہ گزشتہ شب اور آج صبح پیش آیا تھا، رات کو فائرنگ میں مرکزی دروازے کو نشانہ بنایا گیا تھا جبکہ صبح فائر کی گئی گولی کچن کی کھڑکی پر لگی تھی، چیف جسٹس ثاقب نثار نے آئی جی پنجاب کو طلب کرلیا تھا اور چیف جسٹس ثاقب نثار معاملے کی خود نگرانی کررہے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں.

Print Friendly, PDF & Email

Source by [author_name]

اپنا تبصرہ بھیجیں