زہریلی گیس سے متاثرہ روسی ایجنٹ کی صاحبزادی تیزی سے روبہ صحت ex-spy’s daughter

لندن: اسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ برطانیہ میں سابق روسی جاسوس سیرگی اسکریپال کی بیٹی زہریلی گیس سے متاثر ہونے کے بعد تیزی سے روبہ صحت ہورہی ہیں۔

سالز بری اسپتال سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ گیس حملے سے متاثرہ یولیا اسکریپال تیزی کے ساتھ روبہ صحت ہیں تاہم اس کے والد کی حالت بدستور تشویشناک ہے البتہ دونوں کا علاج تیزی سے جاری ہے۔

برطانوی پولیس کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق ماہرین نے پتہ چلایا ہے کہ گیس کی زیادہ مقدار اسکریپال کے گھر کے دروازے پر پھینکی گئی تھی جس کے نتیجے میں سابق روسی جاسوس زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔

برطانوی حکومت نے اس کا الزام روسی حکومت پر عائد کیا ہے جو لندن کے دعوے کی سختی سے تردید کرتا آرہا ہے، اس واقعے نے امریکا اور یورپ کو روس کے خلاف ایک محاذ پر اکٹھا کردیا ہے اور دونوں طرف سے ایک دوسرے کا سفارتی بائیکاٹ جاری ہے۔

واضح رہے کہ چار مارچ کو سابق روسی جاسوس سیرگی اسکریپال اور اس کی بیٹی 33 سالہ یولیا اسکریپال پر انگلینڈ میں سالز بری کے مقام پر ان کے گھر کے باہر مبینہ طور پر زہریلی گیس سے حملہ کیا گیا تھا، جس کے بعد دونوں باپ بیٹی کو تشویشناک حالت میں اسپتال منتقل کردیا گیا تھا۔

سابق روسی جاسوس اور ان کی بیٹی پر گیس حملے کے بعد سے روس کے مختلف ممالک کے ساتھ سفارتی تعلقات کشیدہ ہیں، برطانیہ اور امریکا نے روسی سفیروں کو ملک بدر کردیا جبکہ جواب میں روس نے بھی دونوں ممالک کے سفارتکاروں کو ملک بدر کرنے کا اعلان کیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں